اسلامک اسٹڈیز پروگرام کی تاریخ

اسلامک اسٹڈیز پروگرام کے پراجیکٹ کا آغاز رجب 1429 ؍ جولائی 2008 میں ہوا تھا۔
آج کے دور میں دین کا علم حاصل کرنا کئی اعتبار سے ایک مشکل کام ہے۔ سب سے بڑی مشکل یہ ہے کہ دین کا علم ہر مسلک اپنے مطابق فراہم کرتا ، اسے ہی درست سمجھتا اور دیگر مسالک کے فراہم کردہ علم کو غلط گردانتا ہے۔ دوسری مشکل یہ ہے کہ مدارس میں کسی قسم کے شارٹ کورسز یا ایوننگ کلاسز ممکن ہی نہیں ہوتیں کہ ایک ملازمت پیشہ شخص، کاروبارہ فرد یا فل ٹائم طالب علم اپنی مرضی کے اوقات میں علم حاصل کرسکے۔ ایک اور مسئلہ یہ بھی ہوتا ہے کہ دینی مدارس میں عام طور پر جو ٹیچنگ کا طریقہ کار استعمال ہوتا ہے وہ جدید دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ نہیں۔
انہی مشکلات کے پیش نظر جناب محمد مبشر نذیر نے اس مشن کا آغا ز کیا کہ دین کا علم آبجیکٹوانداز میں فراہم کیا جائے جس پر کسی مسلک کی چھاپ نہ ہو۔ اس کے لئے اسلامک اسٹڈیز پروگرام کا آغاز کیا گیا۔ اس پروگرام کی خاص بات یہ ہے کہ یہ فری آف کاسٹ ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ یہ مکمل طور پر آن لائین ہے اور ایک فرد انٹرنیٹ پر دین کا علم حاصل کرسکتا ہے۔ اس کے لئے وقت کی کوئی پابندی نہیں اور ایک مصروف شخص روزانہ آدھے گھنٹے سے لے کر کئی گھنٹوں اپنی مرضی کے مطابق مطالعہ کرسکتا ہے۔
اسلامک اسٹڈیز پروگرام میں ہم عربی، فقہ، قرآن، حدیث، تاریخ ، تزکیہ نفس، سیرت، مسلم اور غیر مسلم مذاہب کے موازنے پر مبنی علوم کی تعلیم فراہم کرتے ہیں۔ یہ تعلیم ہر قسم کے فرقہ ورانہ تعصب سے بالاتر ہونے کے ساتھ ساتھ جدید طرز تعلیم کے اصولوں سے آراستہ ہے۔
اس وقت اسلامک اسٹڈیز پروگرام میں ہمارے پاس ایک ہزار سے زائد طلبا رجسٹرڈ ہیں۔ اسلامک اسٹڈیز پروگرام کا طریقہ کار یہ ہے کہ پہلے طالب علم خود کو آئی ایس پی کی آفیشل ویب سائٹ پر جاکر رجسٹر کرواتا ہے۔ اس کے بعد اسے اساتذہ فراہم کردئیے جاتے ہیں جو اسے کورس اسائن کرتے، کتابیں فراہم کرتے، اس کے سوالات کے جواب دیتے، اس کے اسائنمنٹ چیک کرتے اور آخر میں اسے ہر ماڈیول کا ایک سرٹفیکیٹ جاری کرتے ہیں جو ادارے کی جانب سے ہوتا ہے۔آپ اس سائٹ پر جاکر رجسٹریشن حاصل کرسکتے ہیں۔

http://www.islamic-studies.info

اگر آپ کے ذہن میں کوئی سوال ہو تو اس ای میل پر رابطہ کریں۔
islamicstudies267@gmail.com

اس وقت یہ پراجیکٹ تکمیل کے مراحل سے گزر رہا ہے۔ اب تک جو کامیابیاں اللہ تعالی نے ہمیں عطا فرمائی ہیں، ان کی تفصیل کو آپ ڈایا گرام پر دیکھ سکتے ہیں۔